ذیابیطس اکثر تمام عمر ہی آپ کے ساتھ رہتی ہے اور اسے بہتر ین علاج کی ضرورت ہوتی ہے. اپنی بہترین غذا کے معمول,ورزش,اور دواںیوں کی احتیاط کے ساتھ آپ بہترین زندگی گزار سکتے ہیں. ایسے ضعیف افراد جن کو زیابیطس ہو ان کیلے یہ ٹپس انتہای کارآًمد ہیں۔

۔1۔ صحت مند غذا کا استعمال

زیابیطس کے مریضوں کو ہمیشہ صحت مند غذا لینی چاہیئے جس میں کاربوہاںڈریٹ کا گلائیسیمک  انڈیکس کم ہو اور شکر کی کم مقدار پائی جاتی ہے. ایسی کاربوہائیڈریٹس جن کا گلائیسیمک انڈیکس 5 سے کم پو ان کا استعمال بہترین جیسے سبزیاں،دالیں اور پھل جبکہ 7 سے زائد گلائیسیمک انڈیکس والے کارب جیسے گندم ،چاول اور شکر سے بچنا بہت ضروری پے۔

ایک چیز اور بھی اہم ہے کہ آپ باقاعدہ غذا کے ماہر کے ساتھ رابطے میں رہیں جو کہ زیابیطس کے متعلق آپ کیلے ایک بہترین پلان ترتیب دے سکے. ٹی.ڈی.سی مستحقین کیلئے غذاکے ماہر اورزیابیطیس کے متعلق تربیت بلامعاوضہ مہیا کرتی ہے۔

۔2۔ چاق وچوبند رہیے

ایروبک کی مشق جیسے چہل قدمی,سوئمنگ اور باںی سائکلنگ آپ کی گلوکوز کی سطح کو متوازن رکھنے میں مدد دیتی ہے. اپنے وزن کو بھی مناسب رکھیں اور صحت مند زندگی گزاریں۔ ٹی.ڈی.سی آپ کو روزانہ تیس منٹ ورزش کی تجویز دیتا ہے جو کہ ہفتے میں پانچ دن کی جا سکتی ہے۔ آپ اپنے ورزش کے دورانیے کو دس منٹ کے حساب سے تین حصوں میں توڑ سکتے ہیں. اسکے علاوہ آپ وزن کی ورزشیں جیسےفری ویٹ ,مزاحمتی بینڈ یا یوگا ہفتے میں دو بار کر سکتے ہیں. یہ ورزشیں آپ کے پٹھوں کو مضبوط کرتی ہے اور آپ کے گلوکوز کی سطح کو متوازن رکھتی ہے. اس کیلے آ پ اپنے ہیلتھ کیئر کے ماہر سے رابطہ کر سکتے ہیں جو کہ آُپ کو بہترین رہنمای فراہم کرتے ہیں۔

۔3۔ اپنے گلوکوز کی سطح کو روزانہ جانچئے

آپ کا ڈاکٹر آپ کو بہترین طور پر بتاسکتا ہے کہ کب اور کیسے اپنے گلوکوز کی سطح کو جانچا جاے۔ عام طور پر وہ لوگ جو انسولین لے رہے ہوں وہ اپنے گلوکوز کی سطح کو مناسب رکھنے میں بڑے مشکل سے گزر رہے ہوتے ہیں۔ اگر انھیں ہائپوگلیسیمیا یعنی ان کی خون میں شکر کی سطح کم رہتی ہو تو ایسے افراد کو روز ہی اپنی گلوکوز کی سطح کو جانچنا چاہئے۔ ضعیف افراد جنھیں زیابیطس ہو انہیں ہائپوگلیسیمیا کیلئے زیادہ احتیاط کرنی ہوتی ہے۔ جب آپ زیابیطس کی ادویات لے رہے ہوں تو یہ بہت ضروری ہوتا ہے کہ آپ باقاعدہ گلوکوز کی سطح کا دھیان رکھیں۔

اگر آپ کو  ہاںپوگلیسیمیا کے واضح اشارے مل رہے ہو تو آپ کو چاہئے کہ وہ روزانہ دس سے بیس گرام شکر لے جو کہ آدھا کپ جوس سے یا چار سے پانچ گلوکوز بسکٹ کے زریعے یا پھر ایک چاے کے چمچے شہد اور گلوکوز کی ٹیبلیٹ سے با آسانی حآصل ہو سکتی ہے۔ پھرآپ تقریبا پندرہ منٹ بعد  اپنے گلوکوز کی سطح کو دوبارہ ٹیسٹ کریں۔ اگر گلوکوز کی سطح کم آرہی ہو تو اس عمل کو روز دہرائی۔

۔4۔ اپنی ادویات باقاعدہ سے لیجئے

یہ بہت عام بات ہوتی ہے کہ آپ اپنی زیابیطس کی ادویات کو لینے میں ناغہ کریں.خوش قسمتی سے بہت سے طریقے ہیں جس سے اپنی ادویات کو منظم رکھا جا سکتا ہے. جیسے آپ اپنی ادویات کیلے ایک ڈبہ بنالیں اور ایک الارم کی مدد سے جو کہ آپ اپنے فون,کمپیوٹر,گھڑی وغیرہ میں لگا سکتے ہیں جس سے آپ کی یاد دہانی ہوتی رہے. اس کے علاوہ آپ ایک چارٹ کی مدد سے بھی اس بات کا تعین کر سکتے ہیں کہ آپ ہر دن میں کب اپنی ادویات لیتے ہیں۔

۔5۔ اپنا بلڈ پریشر اور کولیسٹرول کی سطح کی روزانہ جانچ کریں

دل کی بیماری اور اسٹروک کے خطرے سے بچنے کیلے اپنے صحت کی دیکھ بھال کے ماہر سے جانئے کہ کس طرح سگریٹ نوشی کو چھوڑا جا سکتا ہے. جس سے آپ کے بلڈ پریشر  اور کولیسٹرول کی سطح مناسب رہے۔

۔6۔ اپنے پیروں کی روزانہ جانچ کریں

اس امر کو لازمی بنائیں کہ آپ روزانہ اپنے پیروں کی جانچ کریں کہ کہیں ان میں کوئی کٹ(خراش)یا پھر کوئی انفیکشن کی علامت تو نہیں.آپ اس سلسلے میں اپنے گھر والوں کی مدد لے سکتے ہیں یہ پھر آئینے  کی مدد سے یہ جانچ کر سکتے ہیں۔ اگر آپ کو اپنے پیروں کو دیکھنے میں مشکل درپیش ہوتی ہو۔ اگر آپ کوی زخم یا سرخ پیچ محسوس کریں۔ جس میں انفیکشن دکھائی دے تو فورا اپنے ڈاکٹر سے رابطہ کریں۔ اپنے پیروں کو صاف رکھیں ,باقاعدہ لوشن کا استعمال کریں، جس سے آپ کے پیروں کی خشکی دور ہو۔ اور یہ کہ آرام دہ جوتوں کا استعمال کریں جس سے آپ کے پیروں میں چھالے نہیں ہونگے. ٹی.ڈی.سی کے اندر باقاعدہ پیروں کی نگہداشت کا ایک یونٹ قاںم ہے جس میں ان امور کے متعلق مکمل علاج کیا جاتا ہے۔

۔7۔ اپنی ادویات باقاعدگی سے لیں

یہ ضروری  ہے کہ مریض فلو ویکسین اور نمونیہ ویکسین باقاعدہ  لے. اگر اس کی عمر پینسٹھ سال یا اس سے زیادہ ہو. یہ ویکسین تمام ہی ضعیف افراد کیلے انتہای ضروری ہے خاص کر ان کیلئے جن کو زیابیطس کی شکایت ہو.اور وہ فلو کی پیچیدگی کے حوالے سے زیادہ خطرے میں ہو۔

۔8۔ اپنے سماعت کی جانچ کروائیں

سماعت کی خرابی عمر میں اضافہ کے ساتھ بڑھتی ہے.اور اس کا امکان ان لوگوں میں ذیادہ بڑھ جاتا ہے جن کو زیابیطس ہو.سماعت کی بیماری وقت کے ساتھ پیچیدہ ہوتی رہتی ہے. اگر آپ کو سماعت کی مشکل ہو اور آپ کے دوست اور گھر والے اس بات کو محسوس کر رہے ہو کہ آپ ان کی بات ٹھیک سے نہیں سن پاتے اور یہ کہ ٹی وی اور ریڈیو بہت تیز آواز میں سنتے ہیں. تو فورااپنے کان کی جانچ کے بارے میں ماہر سے رابطہ کریں۔

۔9۔ اپنے دانتوں کو ڈاکٹر سے معائنہ کروائیں

جن لوگوں کو زیابیطس ہوتی ہے ان کو دانتوں اور مسوڑھوں کی بیماری کا زیادہ خدشہ ہوتا ہے.اپنے دانتوں کے ڈاکٹر کے پاس باقاعدگی سی جائیں اور ان کی جانچ کروائیں. اگر آپ کہ مسوڑھوں سے خون آتا ہو یا پھر سوجن رہتی ہوں.ٹی ڈی سی کے پاس ایک منفرد دانتوں کی حفاظت کا یونٹ ہے جہاں ذیابیطیس کے  مستحق مریضوں کا علا ج مفت کیا جاتا ہے۔